وزیراعظم عمران خان کی امریکی صدارتی ایلچی جان کیری سے ملاقات۔

55 Views

وزیراعظم عمران خان کی امریکی صدارتی ایلچی جان کیری سے ملاقات۔

۔۔۔محمد امانت اللہ ۔ جدہ

وزیر اعظم عمران خان سے امریکہ کے خصوصی صدارتی ایلچی برائے موسمیاتی جان کیری سے ریاض میں ”مڈل ایسٹ گرین انیشیٹو (MGI)” سمٹ کے موقع پر ملاقات ہوئی۔

حکومت پاکستان کی طرف سے موسمیاتی تبدیلی سے منسلک ترجیح کو اجاگر کرتے ہوئے، وزیر اعظم نےاس خطرے کے خلاف قومی اور عالمی سطح پر زور دینے کی ضرورت پر زور دیا۔
وزیر اعظم نے پاکستان اور دیگر ترقی پذیر ممالک کو موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے درپیش چیلنجوں پر خصوصی ایلچی سے بات چیت کی، جبکہ 10 بلین ٹری سونامی پروجیکٹ سمیت ماحولیاتی چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے فطرت پر مبنی حل شروع کرنے کے پاکستان کے تجربے کو اجاگر کیا۔پاکستان اور امریکہ کے درمیان موسمیاتی تبدیلی اور ماحولیات پر جاری تعاون کا جائزہ لیتے ہوئے، وزیر اعظم عمران خان نے حال ہی میں منعقدہ ”یو ایس پاکستان کلائمیٹ اینڈ انوائرمنٹ ورکنگ گروپ” کے افتتاحی اجلاس پر اطمینان کا اظہار کیا جس میں دو طرفہ پاک امریکہ تعاون کے ممکنہ شعبوں کا جائزہ لیا گیا۔
خصوصی ایلچی جان کیری نے اس بات پر اتفاق کیا کہ پاکستان اور امریکا کے درمیان دیرینہ تعلقات ہیں، جنہیں آب و ہوا اور ماحولیات سمیت باہمی ہم آہنگی کے شعبوں میں مزید تقویت دی جانی چاہیے۔ انہوں نے موسمیاتی تبدیلی سے لڑنے کے لیے پاکستان کی جانب سے کیے گئے مختلف اقدامات کو تسلیم کیا۔ موسمیاتی تبدیلی کے معاملے پر امریکی انتظامیہ کی ترجیحات پر زور دیتے ہوئے، خصوصی ایلچی کیری نے وزیر اعظم کو بائیڈن انتظامیہ کی جانب سے UNFCCC کانفرنس آف پارٹیز کے انعقاد کے دوران ماحولیاتی کارروائی پر وسیع عالمی اتفاق رائے پیدا کرنے کے لیے کیے گئے مختلف اقدامات سے آگاہ کیا۔
وزیراعظم نے خصوصی ایلچی کی حوصلہ افزائی کی کہ وہ یو ایس انٹرنیشنل ڈیولپمنٹ فنانس کارپوریشن (DFC) کے ذریعے پاکستان اور ترقی پذیر دنیا میں موسمیاتی تخفیف، لچک اور موافقت میں سرمایہ کاری میں معاونت کے لیے دو طرفہ روابط بڑھانے کے امکانات کو مزید تلاش کریں۔
خصوصی ایلچی نے ان شعبوں میں تعاون کی وسیع صلاحیت کو تسلیم کیا اور قابل تجدید ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں سمیت دوطرفہ تعاون کے مواقع کو مزید تلاش کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔وزیر اعظم نے علاقائی تناظر میں پاکستان اور خطے کے لیے پرامن اور مستحکم افغانستان کی اہمیت پر زور دیا۔
وزیراعظم نے زور دیا کہ بین الاقوامی برادری امن اور سلامتی کے تحفظ کے لیے عملی طور پر کام کرے، افغانستان میں انسانی بحران کو ٹالے اور معاشی تباہی کو روکے۔ وزیراعظم نے افغان عوام کی فلاح و بہبود کے لیے مثبت اقتصادی وسائل اور مالیاتی اثاثوں کے اجراء کی ضرورت پر زور دیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے