شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کی 144 سالگرہ مجلس اقبال جدہ نے منائی

73 Views

شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کی 144 سالگرہ مجلس اقبال جدہ نے منائی

محمد امانت اللہ ۔ جدہ

گذشتہ دنوں زوم پر مجلس اقبال جدہ کے زیر اہتمام علامہ اقبال کے یوم پیدائش کے حوالے سے عالمی اقبال کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں پاکستان، بھارت، امریکہ، برطانیہ، کینیڈا اور جرمنی سمیت کئی ممالک کے سکالر اور شعرا نے علامہ کو منظوم اور نثری خراج عقیدت پیش کیا۔
تقریب کا آغاز ممتاز قاری محمد آصف نے تلاوت کلام پاک سے کیا جن کے بعد دو بچوں آمنہ علی اور محمد عثمان علی نے بھی خوبصورت انداز میں تلاوت کلام پاک کی سعادت حاصل کی جسے بہت سراہا گیا۔
نعت خوانی کی سعادت ممتاز نعت خوان محمد نواز جنجوعہ نے حاصل کی جنھوں نے علامہ اقبال کا نعتیہ کلام مدھر آواز میں پیش کیا۔
معروف شاعرہ اور ادیبہ ڈاکٹر ممتاز منور پیر بھائی نے اپنا سیر حاصل مقالہ بعنوان "اقبال کا پیغام نوجوانان ملت کے نام” پیش کیا۔ انھوں نے کہا کہ اقبال کو پیغمبر شاعر کہا جاتا ہے۔انھوں نے اپنے کلام کے ذریعے بنی نوع انسانی کو ایسا پیغام دیا جو انکی زندگی میں انقلاب برپا کر سکتا ہے۔ انکا پیغام عالمگیر صداقتوں پر مشتمل ہے۔

شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کی 144 سالگرہ مجلس اقبال جدہ نے منائی

معروف مصنفہ فوزیہ عباس نے بھی اپنے پر مغز مقالے میں علامہ کو خراج عقیدت پیش کیا۔ انھوں نے کہا کہ اقبال جیسے لوگ صدیوں میں پیدا ہوتے ہیں۔ علامہ کی صورت میں اللہ تعالی نے برصغیر کے کروڑوں مسلمانوں کی آہوں، سسکیوں اور دعاؤں کو شرف قبولیت بخشا۔اقبال نے دو قومی نظریے کی فکری آبیاری کر کے اسے توانا شجر بنایا۔
تقریب کی صدارت ممتاز شاعر محسن علوی نے کی جبکہ نظامت کے فرائض گنیز ورلڈ ریکارڈ ہولڈر شاعر اور مجلس اقبال کے صدر ڈاکٹر محمد سعید کریم بیبانی نے انجام دئے۔ مجلس اقبال کے چیئرمین عامر خورشید رضوی نے سب شرکا بالخصوص مقالہ نگاروں اور شعراء کرام کا شکریہ ادا کیا۔ انھوں نے دونوں مقالوں کے اعلی معیار کو سراہا اور شعرا کو داد دی۔ انھوں نے کہا کہ اقبال کی شاعری کا محور انکی فکر ہے۔ اقبال عظمت آدم کے علمبردار ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اقبال جغرافیائی سرحدوں کے نہیں لامکانیت کے قائل ہیں۔
تقریب میں جن شعراء کرام نے اقبال کے حوالے سے یا انکی زمین میں اپنا کلام سنایا ان میں صدر کانفرنس سید محسن رضی علوی، مجلس اقبال کے صدر ڈاکٹر محمد سعید کریم بیبانی، الیاس بابر اعوان، مہمان خصوصی زیب النساء زیبی، جرمنی سے طاہرہ رباب، ڈاکٹر احمد برقی اعظمی، بابر نثار، ممتاز منور، نور جمشید پوری، رئیس اعظم حیدری، فوزیہ اختر ردا، خادم رسول عینی اور تنویر پھول شامل ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے