جسٹس فائز عیسیٰ کیس کی براہ راست کوریج کی درخواست مسترد

227 Views

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے عدالتی کارروائی کی براہ راست کوریج سے متعلق جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی درخواست خارج کردی ہے۔اکثریتی حکمنامہ جسٹس عمر عطا بندیال نے پڑھ کر سنایا۔

چھ چار کے فیصلے میں عدالتی کارروائی کی براہ راست کوریج کے حق میں اختلافی نوٹ بھی شامل ہے۔10 میں سے چار جج صاحبان نے اکثریتی فیصلے سے اختلاف کیا اور براہ راست کوریج کے حق میں نوٹ لکھا۔

فیصلے کے بعد جسٹس فائز عیسیٰ نے کہا فیصلہ تحریر کرنے اور اختلاف کرنے والے ججز کے نام جاننا چاہتا ہوں۔اس پر جسٹس عمر عطاء بندیال نے ریمارکس دیےفیصلہ پڑھیں گے تو آپکو ناموں کا اندازہ ہوجائے گا۔

اختلافی نوٹ میں  براہ راست نشریات کی استدعا منظور کی گئی۔ لکھا گیا کہ سپریم کورٹ ویب سائٹ پر براہ راست عدالتی کارروائی کو دکھایا جائے۔ کارروائی کی آڈیو ریکارڈنگ ویب سائٹ پر ڈالی جائے۔فیصلہ سنائے جانے کے بعد جسٹس قاضی فائز عیسیٰ صدارتی ریفرنس نظرثانی کیس کی سماعت کل تک ملتوی کردی گئی ۔

سپریم کورٹ کے 10 رکنی بنچ  نے نظرثانی کیس براہ راست دکھانے کی جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی درخواست پر 18 مارچ کو فیصلہ محفوظ کیا تھا اور بعد میں سنانے کا اعلان کیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔