شہباز شریف کا متنازعہ حکومتی الیکشن بل پر کل جماعتی کانفرنس بلانے کا فیصلہ

64 Views

پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے متنازعہ حکومتی الیکشن بل پر کل جماعتی کانفرنس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے انتخابی اصلاحات سے متعلق بڑا فیصلہ کیا ہے۔ متنازعہ حکومتی الیکشن بل پر کل جماعتی کانفرنس بلائی جائے گی: آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) کی تاریخ کا تعین تمام متحدہ اپوزیشن کی جماعتوں سے مشاورت کے بعد جلد کیا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق اے پی سی میں اپوزیشن سے تعلق رکھنے والی تمام سیاسی جماعتوں کو مدعو کیاجائے گا۔ اے پی سی میں الیکشن کمیشن سمیت متعلقہ فریقین، سول سوسائٹی اور میڈیا کو بھی مدعو کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ الیکشن کی نگرانی اور اس کے عمل کو جانچنے والی مختلف تنظیموں اور اداروں کو بھی دعوت دی جائے گی۔

دوسری طرف جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان اور پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی اے پی سی بلانے کے اقدام کی حمایت کر دی۔ شہباز شریف نے مولانا فضل الرحمان اور بلاول بھٹو زرداری سے ٹیلیفون پر مشاورت کی۔

شہباز شریف نے کہا کہ متنازعہ حکومتی الیکشن بل پر کل جماعتی کانفرنس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اے پی سی میں اپوزیشن سے تعلق رکھنے والی تمام سیاسی جماعتوں کو مدعو کیاجائے گا، انتخابات کی نگرانی اور اس عمل کو جانچنے والی مختلف تنظیموں اور اداروں کو بھی دعوت دی جائے گی۔ سنجیدہ اور عوام کی منتخب جمہوری جماعتوں کی انتخابی اصلاحات پر مشاورت اور قومی حکومت عملی ناگزیر ہے۔

جواب دیتے ہوئے مولانا فضل الرحمان اور بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہم آپ کے اس اقدام کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔ تجویز بروقت اور مناسب ہے، ہم تائید کرتے ہیں۔

بلاول نے کہا کہ اے پی سی شفاف، غیر جانبدارانہ اور آزادانہ انتخابات کے انعقاد پر قومی اتفاق رائے پیدا کرنے میں اہم موقع بن سکتی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے